خبرنامہ

انتظار کی گھڑیاں ختم: ورلڈ الیون اور قومی ٹیم قذافی اسٹیڈیم پہنچ گئی

انتظار کی گھڑیاں ختم: ورلڈ الیون اور قومی ٹیم قذافی اسٹیڈیم پہنچ گئی

لاہور(ملت آن لائن)انتظار کی گھڑیاں ختم: ورلڈ الیون اور قومی ٹیم قذافی اسٹیڈیم پہنچ گئی

انتظار کی گھڑیاں ختم ہوگئیں اور آزادی کپ کھیلنے کے لیے ورلڈ الیون اور قومی ٹیم قذافی اسٹیڈیم پہنچ گئیں۔

پاکستان اور ورلڈ الیون کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچز پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ شام 7 بجے شروع ہوگا جس کے لئے شائقین اسٹیڈیم پہنچنا شروع ہوگئے۔

سیکیورٹی فورسز نے گراؤنڈ کے اندر اور باہر پوزیشنیں سنبھال لی ہیں اور شائقین کو جامع تلاشی کے بعد اسٹیڈیم کے اندر جانے کی اجازت دی جارہی ہے۔

قذافی اسٹیڈیم میں داخلے سے قبل مختلف مقامات پر گزر گاہیں بنائی گئی ہیں جہاں اسکیننگ گیٹ لگائے گئے ہیں جس میں سے تماشائیوں کو گزار کر گراؤنڈ میں داخلے کی اجازت دی جارہی ہے۔

ورلڈ الیون کے خلاف پہلے میچ کے لیے قومی ٹیم کے 11 کھلاڑیوں کے ناموں کو بھی حتمی شکل دے دی گئی ہے، قومی گیارہ رکنی ٹیم کپتان سرفراز احمد، فخر زمان، احمد شہزاد، بابراعظم، شعیب ملک، عماد وسیم، شاداب خان، فہیم اشرف، حسن علی، رومان رئیس اور سہیل خان پر مشتمل ہے۔
قومی ٹیم کے فاسٹ بولر محمد عامر بیٹی کی پیدائش کی وجہ سے ٹیم کا حصہ نہ بن سکے جب کہ عثمان شنواری کی جگہ سہیل خان کو ٹیم میں جگہ دی گئی ہے۔

نوجوان کھلاڑی عامر یامین، محمد نواز اور عمر امین ٹیم کا حصہ نہیں ہوں گے۔

سات ممالک کا 14 رکنی ورلڈ الیون اسکواڈ کپتان فاف ڈوپلیسی، ہاشم آملہ، ڈیوڈ ملر، مورنی مورکل، عمران طاہر، ٹم پین، جارج بیلی، گرانٹ ایلیٹ، سیموئل بدری، بین کٹنگ، پال کولنگ وڈ، تمیم اقبال، ڈیرن سیمی اور تھسارا پریرا پر مشتمل ہے۔

دونوں ٹیموں کو نجی ہوٹل سے گراؤنڈ لانے کے لئے سیکیورٹی کے انتہائی سخت اقدامات کئے گئے ہیں جب کہ میچ دیکھنے کے لئے آنے والوں کو کڑی چیکنگ کے بعد گراؤنڈ کے اندر جانے کی اجازت دی جائے گی۔

قذافی اسٹیڈیم کے باہر اور مختلف مقامات پر جگہ جگہ خیر مقدمی بینرز اور بل بورڈز آویزاں کئے گئے ہیں جب کہ گراؤنڈ کے آہنی دروازے پر کھلاڑیوں کی تصویروں والے بل بورڈز بھی لگائے گئے ہیں۔