خبرنامہ

سندھ میں منی لانڈرنگ کا سب سے بڑااسکینڈل،سماعت کچھ دیر میں

سندھ میں منی لانڈرنگ کے سب سے بڑے اسکینڈل پر سپریم کورٹ میں ازخود نوٹس کی سماعت آج ( 12جولائی )کو ہو رہی ہے۔ آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور کو عدالت نے طلب کررکھا ہے۔

سندھ میں 35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت میں سابق صدر آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپورکو آج سپریم کورٹ نے طلب کررکھا ہے۔ قانونی ٹیم نے آصف زرداری کوعدالت نہ جانے کا مشورہ دے رکھا ہے۔ تاہم سابق صدرکی ممکنہ آمد کے پیش نظرسخت سیکورٹی اقدامات کیے ہیں۔

قانونی ماہرین کی ٹیم نے آصف زرداری کو پیش نہ ہونے کا مشورہ دیا تھا۔ نئیر بخاری کا کہنا تھا کہ عدالت نے آصف زرداری کو براہ راست کوئی نوٹس نہیں دیا۔ سپریم کورٹ نے آئی جی سندھ کو حکم جاری کیا ہے کہ آصف زرداری اور فریال تالپور کو پیش کیا جائے۔ اگر ذاتی حیثیت میں طلبی کی گئی تو زرداری خود پیش ہوں گے۔

بڑے کیس میں آصف زرداری کی پیروی فاروق ایچ نائیک، سردار لطیف کھوسہ اور اعتزاز احسن کریں گے۔

مقدمے میں گرفتار حسین لوائی اعتزاز احسن اور فاروق ایچ نائیک کے ہمراہ سپریم کورٹ پہنچ چکے ہیں۔فاروق ایچ نائیک نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ سپریم کورٹ میں آصف زرداری اور فریال تالپور کی نمائندگی کروں گا۔ عدالتی کارروائی دیکھتے ہوئے آصف زرداری کی پیشی سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔

سپریم کورٹ میں پیشی کے علاوہ ایف آئی اے بھی حسین لوائی سے بے نامی اکاؤنٹس سے متعلق تفتیش کرے گی۔ سیاستدانوں اور بیوروکریٹس سے تعلقات سے متعلق بھی پوچھا جائے گا۔

عدالتی حکم پر آصف زرداری اور فریال تالپور سمیت کیس میں نامزد تمام افراد کے نام پہلے ہی ای سی ایل میں شامل کئے جاچکے ہیں۔