کالم عمار چوہدری

دوسرا یومِ پاکستان

  • کیا قوم کو شکر ادا نہیں کرنا چاہیے‘ یہ مسلسل دوسرا یوم پاکستان تھا جو دہشت گردی کو پیروں تلے روند کر اس شان سے منایا گیا کہ ساری دُنیا دنگ رہ گئی۔ جو سمجھتے تھے کہ پشاور سکول میں دہشت گردی کے بعد پاکستانی عوام ڈر جائیں گے ‘ گھروں میں بند ہو جائیں […]

  • تحریک انصاف کس طرف ،…عمار چودھری

    ستمبر کا مہینہ تھا‘ رات کے بارہ بجے تھے‘ بوائز ہوسٹل کے کمرہ نمبر بیالیس میں ایک طالبعلم گہری نیند سو رہا تھا‘ کمرے میں گھپ اندھیرا تھا‘ طالبعلم کی چارپائی کے پاس ہی ایک شلف تھی اور شلف میں کتابیں ترتیب سے رکھی تھیں‘ طالبعلم نے کروٹ لی‘ اس دوران اس کا ہاتھ شلف […]

  • تبدیلی….عمار چودھری

    تعلیم‘ صحت اور روزگار‘ یہ تین ایسے شعبے ہیں جن پر اگر توجہ دی جائے تو اس ملک میں واقعی تبدیلی آ سکتی ہیے۔ یہ نہیں ہو سکتا کہ کسی ملک کے لوگ الف ب تک پڑھنا نہ جانتے ہوں‘ وہاں پولیو سے لے کر دل کے علاج تک کی بیماریاں عام اور ان کے […]

  • تبدیلی

    تعلیم‘ صحت اور روزگار‘ یہ تین ایسے شعبے ہیں جن پر اگر توجہ دی جائے تو اس ملک میں واقعی تبدیلی آ سکتی ہیے۔ یہ نہیں ہو سکتا کہ کسی ملک کے لوگ الف ب تک پڑھنا نہ جانتے ہوں‘ وہاں پولیو سے لے کر دل کے علاج تک کی بیماریاں عام اور ان کے […]

  • بڑا شوہر بنا پھرتا ہے جو بیوی سے ڈرتا ہے…عمار چودھری

    کتنی عجیب بات ہے۔ اسلامی جمہوریہ پاکستان جیسے ملک میں عورت کے حقوق کے تحفظ کیلئے بزور بازو ایسے بل لانے پڑ رہے ہیں جن کی اس اسلامی اور جمہوری ملک میں نافذ کرنے کی ضرورت ہی نہیں ہونی چاہیے تھی۔ چلو بل لانا تو ایک طرف رہا‘ اسے منظور کرانے کے لئے جس طرح […]

  • صرف ایک سو مصطفی کمال چاہئیں!…عمار چودھری

    مصطفی کمال کے بارے میں یہ کہنا کہ انہیں اسٹیبلشمنٹ لائی‘ اس لیے درست نہیں کیونکہ اگر ایسا ہوتا تو ان کے ذریعے کچھ ایسے انکشافات کرائے جاتے جن کا حکومت ِ وقت یا اسٹیبلشمنٹ کو براہ راست فائدہ ہوتا۔انہوںنے رحمان ملک کے سوا‘ جو کچھ بھی کہااس میں کوئی بات ایسی نہ تھی‘ کوئی […]