Quran | Hadith | Seerat | Islam  | Newspapers  |  Photos   |E-Library |

نادرا سندھ میں بارشوں سے متاثرہ خاندانوں کو ساڑھے سات لاکھ پاکستان کارڈز جاری کر چکا ہے، متاثرین میں کارڈز کی تقسیم کیلئے سات اضلاع میں 72 مرا


Monday, 28 November 2011   19:35:43

نادرا سندھ میں بارشوں سے متاثرہ خاندانوں کو ساڑھے سات لاکھ پاکستان کارڈز جاری کر چکا ہے، متاثرین میں کارڈز کی تقسیم کیلئے سات اضلاع میں 72 مراکز میں کام جاری
 اسلام آباد ۔ 28 نومبر (اے پی پی) نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) سندھ میں بارشوں سے متاثرہ خاندانوں کو اب تک ساڑھے سات لاکھ پاکستان کارڈ جاری کر چکا ہے، متاثرین میں پاکستان کارڈز کی تقسیم کیلئے سات اضلاع میں 72 مراکز کام کر رہے ہیں۔ متاثرہ علاقوں میں موبائل رجسٹریشن وینز بھی بھجوا دی گئی ہیں تاکہ جن متاثرین کے پاس قومی شناختی کارڈ نہیں ان کے سی این آئی سی فوری طور پر بنائے جا سکیں۔ پیر کو نادرا کے ذرائع نے بتایا کہ نادرا اب تک سندھ میں بارشوں سے متاثرہ خاندانوں کے سربراہوں کو 749,779 پاکستان کارڈ جاری کرچکا ہے۔ میرپور خاص میں129,784 ، بدین میں243,824 ، ٹنڈو محمد خان میں80,844، شہید بے نظیر آباد(نواب شاہ) میں 183,689، ٹنڈو الہ یار میں 48,038 ،سانگھڑ میں61,732 اور عمر کوٹ میں 1,868 متاثرہ خاندان کے سربراہوں کو پاکستان کارڈ جاری کئے گئے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ سندھ میں بارشوں سے متاثرہ افراد کی سہولت کیلئے سات اضلاع بدین، ٹنڈو محمد خان، شہید بے نظیر آباد ، میرپور خاص، ٹنڈو الہ یار ، سانگھڑ اور عمر کوٹ میں نادرا کے72 مراکز پاکستان کارڈ جاری کررہے ہیں جبکہ 26 مراکز کام کی تکمیل کے بعد اب ایسے حقیقی متاثرین کی شکایات کا ازالہ کررہے ہیں جن کی پاکستان کارڈ کیلئے رجسٹریشن نہیں ہوئی تھی۔ مقامی حکومت کے تعاون سے پی ڈی ایم اے سے متاثرین کا مصدقہ ڈیٹا موصول ہونے کے بعد نادرا مزید مراکز قائم کررہا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ نادرا نے پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی اور دیگر تمام ٹیلی کام کمپنیوں کے تعاون سے موبائل ایس ایم ایس سروس شروع کی ہے تاکہ پاکستان کارڈ پراجیکٹ کیلئے بارش سے متاثرہ فرد کی فہرست میں موجودگی کے بارے میں انہیں آگاہ کیا جاسکے۔ ایس ایم ایس سروس سے مقامی انتظامیہ کو مراکز پر رش کم کرنے میں مدد ملے گی۔ متاثرہ خاندان کا سربراہ اپنا شناختی کارڈ نمبر مخصوص کوڈ 9777 پر بھیج کر پاکستان کارڈ کے حوالے سے اپنی معلومات حاصل کرسکے گا۔ اس سروس کا مقصد جدید ٹیکنالوجی کے استعمال سے صوبائی اور مقامی حکومتوں کے کام میں آسانی پیدا کرتے ہوئے متاثرین کیلئے سہولت فراہم کرنا ہے جبکہ یہ سروس بالکل مفت ہے۔ اب سروس سے متاثرہ افراد کو فہرست میں اپنا اسٹیس جاننے کیلئے مراکز جانے کی ضرورت نہیں رہے گی۔ نئے مراکز قائم کرنے کے علاوہ عوامی نمائندوں اور مقامی انتظامیہ کے اشتراک سے نادرا نے متاثرہ علاقوں مےں موبائل رجسٹرےشن وےنز بھی بھجوادی ہےں تاکہ جس متاثرہ شخص کے پاس شناختی کارڈ نہیں ہے وہ موبائل رجسٹرےشن وےن کے ذریعے مفت شناختی کارڈ بنواسکے۔