کالم اسداللہ غالب

الطاف حسن قریشی کی ملا قاتیں کیا کیا۔۔اسداللہ غالب

  • یہ ایک دبستان صحافت کی داستان ہے جس کا ایک باب میں آج رقم کرنے چلاہوں مگربے حد اختصار کے ساتھ ۔میں خود اس کا ایک ا دنی حصہ رہا۔ روزنامہ صحافت میں نوائے وقت کے حمید نظامی اور مجید نظامی کی گرد کو کوئی نہیں پہنچ سکتا مگر ماہنامہ صحافت میں ڈاکٹر اعجاز حسن […]

  • فلاحی منزل کی جانب حکومت کی پیش رفت۔۔۔اسداللہ غالب

    کون تصور کرسکتا تھا کہ تیل کی قیمتیں بھی کم ہو سکتی ہیں، ہمارے پڑوس میں بھارت نے بھی پٹرول کو سونے کا انڈہ دینے والی مرغی تصور کر رکھا ہے۔آخر حکومتوں نے اپنے اخراجات بھی کہیں سے تو پورے کرنے ہوتے ہیں، ہم کہتے تو ہیں کہ حکومت ہمارے ٹیکسوں سے چلتی ہے مگر […]

  • منظور وٹو کو بیگم ضیا الحق کا سفارشی ٹیلی فون۔۔اسداللہ غالب

    میں ا ن دنوں تاریخ مرتب کر نے کے چکر میں ہوں، یہ سب کچھ ہمارے سامنے رونماہوا، مگر ہم انہیں ایسے بھول گئے جیسے کچھ ہوا ہی نہیں اور یوں لگتا ہے کہ ہم نے عمر عزیز اور وطن عزیز کے بیسیوں قیمتی سال ضائع کر دئے۔ میاں منظور وٹو ، خوش شکل، خوش […]

  • مریم نواز کے تعلیمی عزائم۔۔۔اسداللہ غالب

    مریم نواز کو جب اربوں کے تعلیمی فنڈکا سربراہ بنایا گیا تھا تواس ناچیز نے ان کی سختی سے مخالفت کی، ملک کی سول سوسائٹی بھی تن کر کھڑی ہو گئی اور محترمہ کو اس منصوبے سے ہٹا دیا گیا۔ یقین جانئے کسی کو محترمہ سے ذاتی عناد نہ تھا، بلکہ ہر کسی کی خواہش […]

  • بھارت میں کشمیر یوں کے حامی بھی غدار۔۔اسداللہ غالب

    کشمیری حریت پسندوں کے ساتھ تو انسٹھ برس سے غداروں اور باغیوں والا سلوک کیا جا رہاہے، آٹھ لاکھ بھارتی فوج ان کے سر سے آزادی کا خمار نکالنے میں مصروف عمل ہے۔ مگر اب بھارت میں کشمیریوں کی حمائت کے لئے کوئی آواز اٹھتی ہے ، تواسے بھی قابل تعزیز بنا دیا گیا ہے۔ […]

  • گورنر اظہر کی شناخت پریڈ۔اسداللہ غالب۔انداز جہاں

    گورنر میاں اظہر ہوں اور ان کے ساتھ چہل قدمی کرنے والا کوئی فتنہ پرداز ہو اور گورنر ہاؤس کی بھول بھلیاں ہوں تو پھر کوئی بھی انہیں روک کر کہہ سکتاہے کہ ا پنی شناخت کروائیں۔ یہ ایک سچا واقعہ ہے، سن لیجئے۔ میاں اظہر کہتے ہیں کہ گورنر ہاؤس میں وہ اپنے آپ […]